پانامہ لیکس تحقیقات، لاہور ہائیکورٹ کا لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم

پانامہ لیکس تحقیقات، لاہور ہائیکورٹ کا لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم

لاہور(نمائندہ تہلکہ ٹی وی) ہائیکورٹ نے پانامہ لیکس کیخلاف تحقیقات شروع نہ کرنے کیخلاف درخواستوں پر لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم دیدیا

جسٹس وقاص رئوف مرزا کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے حکم جاری کرنے ہوئے کہا ہے کہ پانامہ اہم نوعیت کا معاملہ ہے اور اس پر لارجر بنچ بنایا جائے، پانامہ لیکس کی تحقیقات کیلئے تمام درخواستیں لارجر بینچ کے روبرو پیش کرنیکی بھی  ہدایت جاری کر دی ہیں،  دو رکنی بنچ نے لارجر بنچ کیلئے تمام درخواستیں چیف جسٹس کو بھجوا دیں۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس وقاص رئوف مرزا کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے سینئر تحقیقاتی صحافی اسد کھرل اور شہری منیر احمد سمیت دیگر درخواستوں پر سماعت شروع کی تو فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ پانامہ لیکس اپنی نوعیت کا پہلا اور قومی اہمیت کا حامل کیس ہے، ان درخواستوں میں بہت سے اہم سوالات اٹھائے گئے ہیں، اس لیے مناسب ہوگا کہ ان درخواستوں کی سماعت لارجر بنچ کرے، عدالت نے تمام درخواستوں کی سماعت کیلئے لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم جاری کرتے ہوئے تمام درخواستیں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو بھجوا دیں، درخواستوں میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ شریف خاندان نے 100 ارب کی کرپشن کی اور پیسہ منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک بھجوایا، تمام ثبوت نیب کو دیدیئے ہیں لیکن ثبوت ہونے کے باوجود نیب شریف خاندان کیخلاف تحقیقات شروع نہیں کر رہا لہذا نیب کو حکم دیا جائے کہ پاناما لیکس کی تحقیقات کرے۔