اب زکام کبھی نہیں ہو گا، زکام کا علاج کرنے والی ویکسین تیار

اب زکام کبھی نہیں ہو گا، زکام کا علاج کرنے والی ویکسین تیار

اٹلانٹا (ہیلتھ ڈیسک)  ایموری یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے ایک ایسی ویکسین تیار کرلی ہے جو ہر طرح کے عام موسمی زکام (سیزنل کولڈ) کا بخوبی علاج کرسکتی ہے۔

موسمی زکام کی ظاہری علامات میں کھانسی، گلے کی خراش، بہتی ناک، کھانسی، دردِ سر اور بخار شامل ہیں جب کہ اس کی وجہ بننے والے 200 سے زائد وائرس اب تک دریافت ہوچکے ہیں۔

اس قسم کا زکام ایک ہفتے سے 10 تک جاری رہتا ہے اور اس دوران کوئی دوا بھی اس کا علاج نہیں کرپاتی۔ اسی لیے مذاقاً یہ بھی کہا جاتا ہے کہ اگر موسمی زکام کا علاج نہیں کروائیں گے تو یہ 7 دن میں ختم ہوگا لیکن اگر اس کا علاج کروائیں گے تو یہ ایک ہفتے میں ختم ہوجائے گا یعنی علاج کروانے یا نہ کروانے سے موسمی زکام پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔

یہ بات اب تک اس لیے بھی درست تھی کیونکہ موسمی زکام کی وجہ بننے والے وائرس اتنی  بڑی تعداد میں ہیں کہ صرف ایک وائرس کا قلع قمع کرنے والی ویکسین بھی کارگر ثابت نہیں ہوسکتی۔

سائنسدان پہلے ہی یہ جانتے ہیں کہ موسمی زکام کی سب سے عام وجہ بننے والے وائرسوں کا تعلق ’’رائنو وائرس‘‘ (rhinoviruses) کی مختلف اقسام سے ہوتا ہے۔ اسی لیے ایموری یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے اسی قسم کے وائرسوں کو ہدف بنانے کا فیصلہ کیا۔