انتہا پسند بھارتیوں کو پاکستانی فنکاروں کی مقبولیت برداشت نہیں، نیلم منیر

انتہا پسند بھارتیوں کو پاکستانی فنکاروں کی مقبولیت برداشت نہیں، نیلم منیر

لاہور (شوبز ڈیسک) اتنا کام کرنے کے باوجود خود کو طالب علم ہی سمجھتی ہوں، ٹی وی کی طرح فلم پر کچھ ہٹ کر ہی کرنا چاہتی تھی، فلم ’’چھپن چھپائی‘‘ فلمی کیرئیر کے حوالے سے اہم سنگ میل ثابت ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار ماڈل واداکارہ نیلم منیر نے انٹرویو میں کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ناظرین نے ٹی وی ڈراموں میں زیادہ تر مجھے سنجیدہ کرداروں میں ہی دیکھا، حالانکہ پروڈیوسر اور ڈائریکٹر جانتے ہیں کہ میں ہر طرح کے رول کرسکتی ہوں۔ٹی وی چینلز پردکھائے جانے والے ڈرامہ سیریلز سنجیدہ موضوع پر ہی بن رہے ہیں۔

اس بات کی خوشی ہے کہ  پروڈیوسراور ڈائریکٹر میری صلاحیتوں پر اعتماد کرتے ہوئے  چیلنجنگ کردارکے لیے میرا انتخاب کرتے ہیں۔اتنا کام کرنے کے باوجود آج بھی خود کو طالب علم ہی سمجھتی ہوں، کیونکہ  انسان زندگی کے آخری سانس تک  کچھ نہ کچھ سیکھنے  عمل جاری رہتا ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ بھارت میں پاکستانی فنکاروں کے ساتھ جو کچھ ہوا اور پاکستان کے حوالے سے جو زہر اگلا جارہا ہے ،یہ کوئی حیرانگی والی بات نہیں۔سبھی جانتے ہیںکہ انتہا پسند بھارتی شروع دن سے ہی پاکستان کو تسلیم ہی نہیں کرتا اور نہ ہی پاکستانی فنکاروں اور گلوکاروں کی بالی ووڈ میں ان کی مقبولیت برداشت ہورہی ہے۔انھوں نے کہا کہ بھارتی حکومت  کشمیریوں کی حق خود ارادیت روکنے کے لیے جتنا چاہے ظلم وستم کے پہاڑ توڑ لے ،اسے ناکامی کا ہی سامنا کرنا پڑے گا۔