تحریک احتساب، عمران خان کی نئی تاریخ، پیپلزپارٹی کو بھی آڑے ہاتھوں لیا

تحریک احتساب، عمران خان کی نئی تاریخ، پیپلزپارٹی کو بھی آڑے ہاتھوں لیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) عمران خان نے کہا آصف زرداری پاناما لیکس کو ایان علی اور ڈاکٹر عاصم کو بچانے کیلئے استعمال کر رہے ہیں۔ خورشید شاہ وزیر اعظم نواز شریف کے پے رول پر ہیں۔  قوم سے 30 اکتوبر کو اسلام آباد آنے کی بھی اپیل کرتا ہوں۔

انہوں نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری اور نواز شریف کرپشن کے کنگ ہیں اور یہ دونوں ملی بھگت سے احتساب کو سبوتاژ کرینگے۔ ان کا مزید کہنا تھا پیپلز پارٹی کو ایم کیو ایم کی طرح مائنس ون فارمولا اپنانا چاہیے کیونکہ زرداری کی وجہ سے پیپلز پارٹی ختم ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا مودی ہر جگہ پاکستان کو تنہا کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور نواز شریف اسے دوست بنا رہا تھا۔ پاکستان میں جمہوریت نہیں مافیا کریسی ہے اور ایک دوسرے کی کرپشن بچاتے ہوئے کرپشن کے ریکارڈ توڑ دیئے گئے۔

عمران خان نے اسلام آباد کو بند کرنے کی تاریخ کا اعلان کرتے ہوئے قوم سے 30 اکتوبر کو اسلام آباد آنے کی بھی اپیل کر دی ہے۔ نواز شریف کے استعفے یا احتساب تک اسلام آباد سے واپس نہیں جائیں گے۔ یہ نہیں چاہتے کہ مسلم لیگ ن کی حکومت جائے ہم صرف نواز شریف کا احتساب چاہتے ہیں۔ کپتان نے کہا حکومت وزراء کہتے ہیں عمران خان وزیراعظم بننے کیلئے احتجاج کر رہے ہیں ۔ ہر کوئی وزیراعظم بن کر فیکٹریاں نہیں لگاتا۔ ن لیگ کا موٹو گینگ پراپیگنڈے میں مصروف ہے۔ دھرنے نے ٹریننگ کرا دی اب کچھ بھی کر سکتے ہیں۔