سرگودھا یونیورسٹی ویمن کیمپس فیصل آباد کیخلاف جاری ہونیوالا پیرنٹس الرٹ نوٹس توہین عدالت قرار

سرگودھا یونیورسٹی ویمن کیمپس فیصل آباد کیخلاف جاری ہونیوالا پیرنٹس الرٹ نوٹس توہین عدالت قرار

فیصل آباد (نمائندہ تہلکہ ٹی وی ) سرگودھا یونیورسٹی وویمن کیمپس فیصل آباد کیلئے مین کیمپس کے دو افراد کی ملی بھگت سے جاری ہونیوالا پیرنٹس الرٹ نوٹس جھوٹ کا پلندا نکلا،جھوٹے نوٹس کے ذریعے داخلوں کے سلسلے کو روکنے میں رکاوٹ ڈالی گئی، ہائیکورٹ نے دو افراد کو شوکاز نوٹس جاری کردیئے ، تہلکہ ٹی وی تفصیلات سامنے لے آیا۔

حکومت پنجاب کے تحت کام کرنے والی مختلف یو نیورسٹیوں نے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ (3-p)پالیسی کے تحت کل 11عدد کیمپسزقائم کئے تھے۔ایچ ای ڈی ،ایچ ای سی کی جانب سے ایک حکم نامے کے ذریعہ سے ان تمام سب کیمپس میں سال 2016کیلئے داخلوں پرپابندی عائد کردی گئی تا وقت کہ ایچ ای سی کا این او سی حاصل نہ کر لیا جائے۔مذکورہ کیمپس کی جانب سے ایچ ای سی سے این او سی حاصل کرنے کی غرض سے 2013میں ہی با ظابطہ طور پر اپلائی کر دیا گیا۔

اس سلسلے میں سرگودھا یونیورسٹی وویمن سب کیمپس فیصل آباد کی طرف سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کی گئی ۔جس میں ایچ ای سی اور ایچ ای ڈی کے اس حکم کو چیلنج کر دیا گیا جسکے تحت نئے داخلوں پر پابندی عائد کی گئی تھی۔ جسٹس میاں گل حسن اوورنگ زیب کی عدالت میں زیر سماعت کیس میں مورخہ 23ستمبر 2016کو حکم جاری ہوا کہ پنجاب گورنمنٹ کا ایچ ای ڈی اور مرکزی حکومت کا ایچ ای سی محکمہ نئے داخلوں اور تعلیمی معاملات میں کسی بھی قسم کی مداخلت نہیں کرے گا ۔

uos-1
uos-2

دوسری جانب ایچ ای سی کے پاس ،سب کیمپسز کے بارے میں رولز نہیں بنے ہیں۔جسکی وجہ سے این او سی حاصل کرنے میں دشوار ی کا سامنا ہے۔این او سی حاصل کرنے کیلئے مختلف سب کیمپسسز انتظامیہ نے کوشش جاری رکھی ہوئی ہیں۔

مورخہ 26ستمبر2016ایچ ای ڈی اورسرگودھا یونیورسٹی سرگودھا نے ڈیلی ایکسپریس میں سٹوڈنٹس پیرنٹس الرٹ نوٹس جاری کر دیا ،جسکی وجہ سے نئے داخلوں کے پر اسس میں رکاوٹ ڈالی گئی ۔جس پر کاروائی کرتے ہوئے ہائی کورٹ کے جج جسٹس میاں گل حسن اورنگ زیب نے وائس چانسلر سرگودھا یونیورسٹی ڈاکٹر ظہورالحسن ڈوگر اور چئیر مین ایڈمشن کمیٹی ڈاکٹر محمد فضل کے خلاف مورخہ 5اکتوبر 2016کو حکم جاری کرتے ہوئے انہیں شوکاز نوٹس جاری کر دیئے کہ کیوں نہ ان کے خلاف توہین عدالت کی کاروائی عمل میں لائی جائے۔یہ تما م عدالتی کاروائی ایم اے جناح ایجوکیشن سوسائٹی کے وائس پریزیڈنٹ خالد محمود ملک نے خواجہ محمد فاروق ایڈووکیٹ سپریم کورٹ آف پاکستان کی وساطت سے کی ۔یونیورسٹی آف سرگودھا وویمن کیمپس فیصل آباد ایم اے جناح ایجوکیشن سوسائٹی کے زیر تحت کام کر اہا ہے۔
یاد رہے کہ سرگودھا یونیورسٹی فیصل آباد وویمن کیمپس کا آغاز2013سے ہوا ۔اس وقت 2000کے لگ بھگ طالبات زیر تعلیم ہیں،مختلف شعبہ تعلیم میں زیر تعلیم ہیں۔