ڈگری : پینے کےصاف پانی کی قلت

ڈگری : پینے کےصاف پانی کی قلت

میرپورخاص ( فرحان منہاج ) میرپورخاص کی تحصیل ڈگری کی ایک لاکھ کی آبادی کے لیے ایک ہی فلٹرپلانٹ۔ فلٹرپلانٹ پر رش کے باعث شہر کی اکثریت فلٹر پانی خرید کر پینے پر مجبور۔ 

تفصیلات کے مطابق ڈگری شہر میں ٹاؤن کونسل ڈگری کا ایک فلٹر پلانٹ کام کررہا ہے جو شہر کی ایک فی صد ضرورت کو بھی پورا نہیں کررہا۔ جبکہ نجی این جی او کی طرف سے واٹر سپلائی پر فلٹر پلانٹ لگایا گیاہے جو کہ شہر سے دور ہونے کی وجہ سے شہری وہاں جانے سے قاصر ہیں۔ جبکہ ٹاؤن کونسل کی جانب سے لگا ہوا فلٹر پلانٹ مختیار کار آفیس کے قریب ڈگری پریس کلب روڈ پرنصب ہے۔ جو کہ پورے شہر کی ایک فی صد ضرورت بھی پوری نہیں کررہا۔ٹاؤن کونسل کی طرف سے ایک فلٹر پلانٹ میر محلے میں لگاگیا تھا لیکن وہ فلٹر پلانٹ سرفرازواہ کی وجہ سے تجاویزات میں آگیا تھا جسے ختم کردیا گیا تھا زرائع کے مطابق وہ اتارا ہوا فلٹر پلانٹ مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے ناکارہ ہوگیا ہے۔

واٹر سپلائی کا پانی صاف نہ ہونے اور فلٹر پلانٹ پر رش کی وجہ سے شہر کی اکثریت نجی فلٹر پلانٹس سے پیسوں سے پانی لیکر پینے پر مجبور ہے جبکہ ایسے خاندان جو پیسوں سے پانی لیکر افورٹ نہیں کرسکتے گندہ پانی پی کر مختلف بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں۔عوامی اور سماجی حلقوں نے ٹاؤن کونسل ڈگری، ایم پی اے ڈگری الحاج میر محمد حیات خان ٹالپور،ایم این اے میر منور تالپوراور وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈگری شہر میں 14وارڈز ہیں اس لیے شہر کو تین آر او پلانٹس دیے جائیں تاکہ شہر کی اکثریت صاف پانی پی سکے۔