عراق : داعش نے اپنے ہی 58 ساتھیوں کو قتل کردیا

بغداد / نیویارک (فارن ڈیسک )  عراق میں داعش کے جنگجوؤں نے اپنے ہی ساتھیوں کی طرف سے بغاوت کا منصوبہ ناکام بنا دیا جس کے جرم میں جنگجوؤں نے اپنے ہی 58 ساتھیوں کو قتل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق داعش نے موصل میں اپنے ایک کمانڈر کی طرف سے بغاوت کا منصوبہ ناکام بنا دیا جو دیگر باغی جنگجوؤں کے ساتھ مل کر موصل شہر کو ’’جو داعش کے زیر قبضہ ہے‘‘ عراقی فورسز کے حوالے کرنا چاہتا تھا۔ باغی کمانڈر اندر سے عراقی فورسز کے ساتھ مل گیا تھا۔ بغاوت عیاں ہونے پر داعش کے جنگجوؤں نے اپنے ہی 58 ساتھیوں کوقتل کردیا۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ ملزم باغیوں کو پانی میں ڈبو کر ہلاک کیا گیا اور بعدمیں ان کی لاشوں کو اجتماعی قبر میں دفنا دیا گیا۔ باغی کمانڈر داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کا قریبی ساتھی تھا۔

دوسری طرف بین الاقوامی امدادی اداروں نے کہا ہے کہ عراق میں اندرون ملک بیدخل ہونے والے مہاجرین کا ایک نیا بحران پیدا ہونے کا شدید خدشہ ہے۔ امدادی اداروں کی جانب سے یہ بات عراق کے دوسرے بڑے شہر موصل کا قبضہ داعش سے چھڑانے کیلیے ممکنہ جنگ کے تناظر میں کہی گئی ہے۔