برطانوی پارلیمان کےتمام ارکان کشمیر کا دورہ کریں :ایاز صادق

برطانوی پارلیمان کےتمام ارکان کشمیر کا دورہ کریں :ایاز صادق

لندن ( مانیٹرنگ ڈیسک) ایاز صادق نے برطانوی پارلیمان میں آل پارٹیز پارلیمانی گروپ کے ارکان کو پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر کا دورہ کرنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ انسانی حقوق کی مبینہ خلاف ورزیوں کا جائزہ لینے کے لیے  کشمیر کا دورہ کرنے کے لیے دباؤ ڈالیں۔

لندن میں برطانوی پارلیمان میں کل جماعتی کشمیر گروپ کے ارکان سے خطاب کرتے ہوئے ایاز صادق نے کہا کہ برطانوی وزیر اعظم ٹریزا مئے کو آئندہ ماہ اپنے دورۂ بھارت کے دوران کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر بات کرنی چاہیے۔ سپیکر نیشنل اسمبلی نے آل پارٹیز پارلیمانی گروپ کے ارکان میں کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بارے میں ایک سی ڈی بھی تقسیم کی۔ آل پارٹیز برطانوی پارلیمانی گروپ کے ارکان سے ایاز صادق کی ملاقات کے دوران پاکستان میں حزب اختلاف کی جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید نوید قمر اور لندن میں پاکستان کے سفیر ابن عباس بھی موجود تھے۔

برطانوی ارکان پارلیمان اور خاص طور پر پاکستانی نژاد ارکان پارلیمان پر زور دیتے ہوئے انھوں نے کہا انھیں چاہیے کہ وہ برطانوی وزیر اعظم پر بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں جاری عوامی احتجاج پر بات کریں۔ ایاز صادق نے اپنی تقریر کے دوران کشمیر میں جاری عوامی احتجاج پر تفصیل سے روشنی ڈالی اور بھارت کی طرف سے جنگی ہیجان پیدا کرنے کے اقدامات پر ارکان پارلیمان کو پاکستان کی تفتیش سے آگاہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان صبر و تحمل کی پالیسی پر سخت سے کار بند ہے اور اب تک بھارت کی طرف سے تمام جارحیت کا پاکستان نے بڑے صبر سے جواب دیا۔ یہاں پر انھوں نے انڈیا کی طرف سرجیکل سٹرائیک کرنے کے دعوؤں پر بھی بات کی اور انھیں مکمل طور پر بے بنیاد قرار دیا۔

ایاز صادق نے پاکستان کے صوبے بلوچستان میں بھی انڈیا کی مداخلت کی بات کی اور کہا کہ بلوچستان سے بھارتی حفیہ ایجنسی کے اہلکار پکڑے گئے ہیں جو پاکستان میں دہشت گردی کے واقعات میں ملوث پائے گئے ہیں۔ سپیکر نیشنل اسمبلی نے اوڑی حملے کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ اس حملہ کے فوراً اس کا الزام بغیر کسی ثبوت کے پاکستان پر ڈال دیا گیا۔ سید نوید قمر نے کمیٹی کے ارکان سے کہا کہ اب وقت آ گیا کہ بین القوامی برادری کو اس مسئلہ کو حل کرانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ انھوں نے کہا کہ کشمیر کے عوام نے فیصلہ کر لیا ہے کہ وہ اب بھارت کے تسلط کو اتار پھینکیں گے۔ برطانوی رکن پارلیمان ڈیوڈ نتال نے مسئلہ کشمیر کے حل ہونے کی ضرورت پر زور دیا اور پارلیمان کے اپنے ساتھیوں کو اس مسئلہ کی طرف توجہ دلانے پر شکریہ ادا کیا۔