دفاعِ پاکستان کونسل کےوفد کی وزیرِداخلہ سے ملاقات، مجموعی ملکی صورتحال پر تبادلہ خیال

دفاعِ پاکستان کونسل کےوفد کی وزیرِداخلہ سے ملاقات، مجموعی ملکی صورتحال پر تبادلہ خیال

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک) مولانا سمیع الحق کی سربراہی میں دفاعِ پاکستان کونسل کے وفد کی وزیرِداخلہ سے ملاقات سیکیورٹی سمیت مجموعی ملکی صورتحال پر تبادلہ خیال۔

وفد نے وزیرِداخلہ سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ اسلام اور پاکستان کے حوالے سے ہر عمل اور ہر قدم میں پیش پیش ہوں گے ۔ ملکی سیکیورٹی صورتحال کو بہتر بنانے کی کوششوں کی قدر کرتے ہیں۔ تاہم چند عناصر اسلامی نظریات اور اسلامی قوتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں حکومت اسکا نوٹس لے۔

 وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دین پاکستان کی طاقت، حرمت اور مان ہے۔ دنیا کی کوئی طاقت دین کو پاکستان سے الگ نہیں کر سکتی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اسلامی نظریے پر ہی قائم ہوا تھا اور انشاء اللہ اسی نظریے پر قائم و دائم رہے گا۔  تمام صوبوں سے کہا جائے گا کہ شیڈول فورکی لسٹوں کا دوبارہ جائزہ لیا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ  شیڈول فور میں شامل تمام شخصیات پاکستانی ہیں انہیں شناختی کارڈ اور شہریت سے کس طرح محروم کیا جا سکتا ہے؟  وزیرِداخلہ نے متعلقہ محکموں کو ہدایت کی کہ  اگر ایسا ہوا ہے تو اس عمل کو درست کیا جائے اور آئندہ اس قسم کے فیصلوں سے مکمل اجتناب کیا جائے۔ انہوں نے مزید کہاکہ سیکیورٹی کی بحالی میں دینی قوتوں نے کلیدی کردار ادا کیا ہے انہیں کسی صورت بھی نشانہ بنانے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔
تمام صوبائی حکومتوں سے مل کر دینی حلقوں کے تحفظات دورکئے جائیں گے۔