پانامہ لیکس تحقیقات، سپریم کورٹ نے سماعت کی تاریخ یکم نومبرمقررکردی

پانامہ لیکس تحقیقات، سپریم کورٹ نے سماعت کی تاریخ یکم نومبرمقررکردی

اسلام آباد (نمائندہ تہلکہ ٹی وی) سپریم کورٹ نے پاناما لیکس پر درخواستوں کی سماعت یکم نومبر مقرر کر کے وزیراعظم سمیت تمام فریقین کو جواب جمع کرانے کی ہدایت کردی۔

 سپریم کورٹ نے پاناما لیکس پر درخواستوں کی سماعت 2 نومبر تک ملتوی کی تھی تاہم اب سپریم کورٹ نے پاناما لیکس پر درخواستوں کی سماعت یکم نومبر کو مقرر کر دی ہے۔ سپریم کورٹ نے وزیراعظم نواز شریف، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، مریم نواز، کیپٹن صفدر، حسن اور حسین نواز سمیت تمام فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے یکم نومبر سے قبل جواب جمع کرانے کی ہدایت کی ہے اور اس حوالے سے نوٹسز بھی جاری کر دیئے گئے ہیں۔

اس خبر کو بھی پڑھیئے: پانامہ لیکس : اسد کھرل کی درخواست پر اٹارنی جنرل اور چیئرمین نیب کو نوٹسز جاری

اس کے علاوہ سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت، سیکرٹری داخلہ، پیمرا، نیب، الیکشن کمیشن، ایف بی آر، سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ اور وزارت پارلیمانی امور کو بھی نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا کہ 30 اکتوبر تک جواب جمع کرائیں تاکہ پاناما لیکس پر کارروائی کو آگے بڑھایا جائے۔

اس خبر کو بھی پڑھیئے: پانامہ لیکس تحقیقات : سینئرصحافی اسدکھرل کی پٹشن پرچیف جسٹس لاہورہائیکورٹ نے فل بنچ تشکیل دیدیا

واضح رہے کہ پاناما لیکس پر سینئر صحافی اسد کھرل، تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان، عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید اور امیر جماعت اسلامی سراج

الحق نے علیحدہ علیحدہ درخواستیں دائر کر رکھی ہیں۔

01

02