شریف برادران نے پولیس کو جاتی امراء کے حفاظتی دستے میں بدل دیا، عوامی تحریک

شریف برادران نے پولیس کو جاتی امراء کے حفاظتی دستے میں بدل دیا، عوامی تحریک

لاہور(نمائندہ تہلکہ ٹی وی) تہلکہ ٹی وی نے رانا ثناء اللہ کے خفیہ اجلاس کی خبرمنظر عام پر لایا تو تحریک انصاف کے بعد عوامی تحریک کا موقف بھی سامنے آگیا۔ پاکستان عوامی تحریک کے سنیئر مرکزی رہنما خرم نواز گنڈا پور نے کہاہے کہ پنجاب حکومت سانحہ ماڈل ٹاؤن آپریشن کے ذمہ دار پولیس افسران کو تحفظ دے رہی ہے۔

ہمارے اس موقف کی تصدیق صوبائی وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ کے اس موقف سے بھی ہو رہی ہے جس میں انہوں نے آئی جی پنجاب کی موجود گی میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کے دوران برملا کہا کہ پولیس کو تحریک انصاف کے خلاف کریک ڈاؤن کا مشن سونپا جائے ، جس طرح ہم نے سانحہ ماڈل ٹاؤن آپریشن میں حصہ لینے والے پولیس افسروں کو بیرون ملک بھجوایا ان کی مالی مدد کی اور ان کے خلاف آج کے دن تک کوئی محکمانہ انکوائری نہیں ہونے دی ،انہیں گراؤنڈز پر پولیس کا مورال بلند کیا جائے ،ہم انہیں تحفظ دیں گے۔

رانا ثناء اللہ کے خفیہ اجلاس کی خبر یہاں پڑھیئے : تحریک انصاف دھرنا روکنے کیلئے رانا ثناء اللہ کی سربراہی میں خفیہ اجلاس

خرم نواز گنڈا پور نے کہاکہ شریف برادران نے پنجاب پولیس کو جاتی امراء کے ایک حفاظتی دستے میں تبدیل کر دیا ہے ،پولیس سے سیاسی مخالفین کو قتل کرانے اور زد و کوب کروانے کا کام لیا جا رہا ہے ،پولیس کے ادارے کو شریف برادران نے تباہ و برباد کر دیا ۔خرم نواز گنڈا پور نے مرکزی سیکرٹریٹ میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ نواز شریف سیاسی شہید بننا چاہتے ہیں اسی لئے انہوں نے کھل کر قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف سازشیں شروع کر رکھی ہیں ،سیرل لیکس کے بعد بھی وزیر اعظم ہاؤس سے میڈیا کو فیڈ کیا جا رہا ہے، وزیراعظم ہاؤس میں ایک انٹرنیشنل ڈیسک قائم کیا گیا ہے جہاں سے شریف بچاؤ مہم کے تحت خبریں بھجوائی جا رہی ہیں ۔ن لیگ کے لوگ برملا کہہ رہے ہیں ایک فیصلہ پنڈی والوں نے کر لیا اور ایک فیصلہ ہم نے بھی کر رکھا ہے۔انہوں نے کہاکہ نواز شریف کا اقتدار اور سیاست کچھ دنوں کی مہمان ہے ،پانامہ لیکس کا احتساب بھی ہو گا اور سانحہ ماڈل ٹاؤن کا قصاص بھی ۔