خبر لیک کرنے کا معاملہ،وفاقی حکومت،وزارت داخلہ کو نوٹسز جاری : لاہور ہائیکورٹ

خبر لیک کرنے کا معاملہ،وفاقی حکومت،وزارت داخلہ کو نوٹسز جاری : لاہور ہائیکورٹ

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) لاہور ہائیکورٹ نے قومی سلامتی کے اجلاس کی خبر لیک کرنیوالوں کیخلاف تحقیقات خفیہ رکھنے کے حوالے سے درخواست پر وفاقی حکومت اور وزارت داخلہ کو 15نومبر کیلئے نوٹس جاری کر دیئے ہیں ۔

 چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس منصورعلی شاہ نے سابق وزیر قانون بابراعوان کی درخواست پر سماعت کی۔ جس میں قومی سلامتی کے اجلاس کی خبر لیک کرنیوالوں کیخلاف تحقیقات خفیہ رکھنے کے اقدام کو چیلنج کیا گیا ہے۔ بابراعوان نے عدالت کو بتایا کہ قومی سلامتی کے ان کیمرہ اجلاس کی خبر منصوبہ بندی کے تحت لیک کی گئی اور خبر لیک کروا کر دنیا بھر میں پاک فوج کو بدنام کرنے کی سازش کی گئی ہے۔

درخواست گزار کے مطابق حکومت نے قومی سلامتی کے اجلاس کی خبر لیک ہونے پروفاقی وزراء اور بیورو کریٹس پر انگلیاں اٹھ رہی ہیں اس لیے سیکرٹری وزارت داخلہ کو تحقیقات کے نتائج منظرعام پرلانے کا حکم دیا جائے۔ چیف جسٹس منصورعلی شاہ نے درخواست سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے وفاقی حکومت، وزارت داخلہ اور ایف آئی اے کو 15 نومبر کے لیے نوٹسز جاری کر دئیے ۔