مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے گھروں پر چھاپے لوٹ مار، درجنوں شہری گرفتار

مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے گھروں پر چھاپے لوٹ مار، درجنوں شہری گرفتار

سری نگر (فارن ڈیسک )  مقبوضہ کشمیرمیں کٹھ پتلی انتظامیہ کی طرف سے کرفیو، پابندیوں اور بے گناہ شہریوں کی پکڑ نے کا سلسلہ مسلسل جاری ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ علاقے میں جاری انتفادہ کو اتوار کو 107 روزہو گئے۔ مقبوضہ کشمیرپربھارت کے غیرقانونی قبضے اور قابض بھارتی فورسزکے ہاتھوں نہتے شہریوں کے قتل عام کے خلاف اتوار کو مسلسل 107ویں روز بھی مکمل ہڑتال کی گئی۔ تمام مرکزی بازار اور کاروباری ادارے بند رہے جب کہ سڑکوں پر ٹریفک کی آمدورفت بہت کم تھی۔

بھارتی پولیس نے سری نگر کے علاقے برزلہ کا محاصرہ کر کے 20 افراد کو گرفتار کر لیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس اہلکار گھروں میں داخل ہو گئے اور خواتین، بچوں اور معمر افراد سمیت مکینوں کو مار پیٹ کا نشانہ بنانے کے علاوہ نوجوانوں کو اپنے ساتھ لے گئے۔ ایک خاتون نے میڈیاکوبتایاکہ اس کی بیٹی کی اگلے ماہ شادی ہے، پولیس اہلکاروں نے اس کے گھر پر چھاپ مارااورتمام زیورات لوٹ لیے جبکہ اس کے شوہر اور بیٹے کو گرفتار کرلیا۔ شہریوں نے کہا کہ بھارتی پولیس اہلکار ان کے موبائل فون بھی لے گئے۔ لوگوں کا کہنا تھا کہ انھیں نمازفجر بھی ادا نہیں کرنے دی گئی۔ بھارتی فوج اور پولیس نے ضلع کپواڑہ میں بھی ایک مشترکہ کارروائی کے دوران55 شہریوں کو گرفتار کر لیا۔