کیا ایک نیا این آراو ہونے والا ہے؟ رؤف کلاسرا کا اہم انکشاف

کیا ایک نیا این آراو ہونے والا ہے؟ رؤف کلاسرا کا اہم انکشاف

اسلام آباد (تہلکہ ٹی وی مانیٹرنگ ڈیسک) کیا حکومت اور فوج کے درمیان ایک نیا این آر او ہونے جارہا ہے ؟ جنرل پرویز مشرف اور محترمہ بے نظیر بھٹو کے درمیان این آر او کروانے والے، پاکستان میں سابق برطانوی ہائی کمشنر اور برطانیہ کے موجودہ نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر مارک لائل کی وزیراعظم پاکستان نوازشریف، چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف ، وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، سلامتی امور کے مشیر جنرل ناصر جنجوعہ سے الگ الگ ملاقاتیں، ملاقاتوں کا مقصد کیا تھا ؟ اہم سوالات نے جنم لینا شروع کردیا۔

چینل 92کے پروگرام مقابل میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر تجزیہ کار و تحقیقاتی صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ برطانوی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزرمارک لائل کی وزیراعظم نوازشریف کے بعد آرمی چیف سے ملاقات نے کئی سوالات کو جنم دے دیا۔ لگتا یہی ہے کہ مارک لائل ایک نیا پلان لائے ہیں۔وہ ایک نیا این آراو کرانے کی کوشش کریں گے۔اب دیکھنا ہے کہ مارک لائل اور کس کس سے ملیں گے؟ مارک لائل کی عمران خان سے بھی ملاقات ہوتی ہے یا نہیں؟ انہوں نے کہا کہ کشید ہ سیاسی صورتحال میں مارک لائل کی پاکستان آمد معمولی بات نہیں ہے۔ ان کا پاکستان کی سیاست میں اہم کرداررہاہے۔

تجزیہ کار عامر متین نے کہا کہ ہماری تمام بڑی جماعتوں کا دوسرا گھر برطانیہ ہے، اس لیے برطانوی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزرمارک لائل کی پاکستان آمداہم ہے۔ایک برطانوی وزیراعظم نے کہاتھا کہ نوازشریف کی برطانیہ میں بڑی سرمایہ کاری ہے،اس لیے ان کونوازشریف کیاقتدارکی فکرہے۔ امریکہ کے بارے میں کہاجاتا ہے کہ انہوں نے جب بھی پاکستان سے کوئی غلط کام کراناہوتاہے توبرطانیہ کے ذریعے کرایا جاتا ہے۔

یاد رہے کہ مارک لائل نے بے نظیر اور مشرف کے درمیان این آر او میں بھی اہم کرادر ادا کیا تھا۔ کنڈلیزا رائس نے اپنی کتاب میں بے نظیر اورمشرف کی صلح میں مارک لائل کے کرادر پر روشنی ڈالی ہے۔