کوئٹہ حملے میں اہلکاروں کا آخری فون اور زخمیوں کا بیان کیا ؟

کوئٹہ حملے میں اہلکاروں کا آخری فون اور زخمیوں کا بیان کیا ؟

کوئٹہ (نمائندہ تہلکہ ٹی وی) پولیس ٹریننگ سینٹر حملے نے پولیس اہلکاروں سے ان کے خواب چھین لئے۔ ٹریننگ سینٹر میں کچھ اہلکاروں نے اپنے گھر فون کیا اور کہا کہ یہ شائد آخری فون ہو، پولیس ٹریننگ پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا ہے۔ کچھ اہلکار خود کو بچانےمیں کامیاب ہوئے۔

پولیس ٹریننگ سینٹر میں جب دہشت گردوں نے حملہ کیا تو پولیس اہلکاروں  کا کہنا ہے کہ ان کو کچھ سمجھ نہیں تھا آرہا کہ کرے کیا۔ کچھ لوگوں نے تو گھر فون کر کے بتایا کہ شائد یہ میرا آخری فون ہو کیونکہ ٹریننگ سینٹر پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا ہے۔ جن میں سوئی ڈیرہ بگٹی سے سالار بگٹی نے اپنے بھائی کو فون کیا تھا اور کہا کہ ہو سکتاہے یہ میرا آخری فون ہو۔

اس خبر کو بھی پڑھیئے: کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر دہشت گردوں کا حملہ،60اہلکار شہید،3دہشت گردہلاک

کوئٹہ سول ہسپتال میں زخمی پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ جب دہشت گردوں نے حملہ کیا تو چند لوگ الماریوں میں چھپ گئے ،چند لوگوں نے چھت سے کود پڑے جان بچانے کیلئے۔ انکا کہنا تھا کہ ہم ہمارے پاس کچھ نہ تھا ۔ہمیں کچھ سمجھ نہیں تھا آرہا کہ کیا کرے کچھ الماریوں میں چھپ گئے کچھ چھت پہ چڑھ گئے چند نے جان بچانےکیلئے چھت کود پڑے۔