لوٹ مار کا ایک اورسکینڈل، محکمہ ڈاک کے سینکڑوں کمپیوٹر ناکارہ

لوٹ مار کا ایک اورسکینڈل، محکمہ ڈاک کے سینکڑوں کمپیوٹر ناکارہ

کراچی (مختار احمد ) قومی دولت کی لوٹ مار کا ایک اور ایک اور سکینڈل سامنے آگیا ،محکمہ ڈاک سے سیکڑوں نئے کمپوٹرز غائب کر کے ناکارہ رکھ دیئے گئے، تحقیقات مکمل ،آئندہ چند روز میں کاروائی کا امکان ، تفصیلات سامنے آگئیں۔

ذرائع کے مطابق محکمہ ڈاک کراچی ریجن کے 6جنرل پوسٹ آفس ،4ڈویژن ،10ہیڈ آفس اور 300ڈاکخانوں میں سے بیشتر ڈاکخانوں کو مکمل طور پر کمپیوٹر ائز کرنے کے لئے جو کمپیوٹر فراہم کئے گئے تھے ان میں سے سینکڑوں کمپیوٹر غائب کر کے ان کی جگہ اسکریپ کمپیوٹر رکھ دیئے گئے تاکہ کمپیوٹر ز کی چوری کو چھپایا جا سکے ،کمپیوٹر کے غائب ہونے کے بعد کمپیوٹرآپریٹرز ہاتھ سے ہی کام کر رہے ہیں ۔اس کا علم جب ڈائریکٹر جنرل آفس اسلام آباد کو ہوا تو اس نے رازداری کے ساتھ کراچی ریجن کے افسران پر مشتمل ایک تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی،جس نے مکمل چھان بین کے بعد ڈی جی آفس کو کمپیوٹرز چوری کی تصدیق کرتے ہوئے جن دفاتر سے چوری ہوئی ان کی مکمل فہرست کے ساتھ ہیڈ آفس کو رپورٹ بھیجی گئی، جسے تاحال صیغہ رز میں رکھا جا رہا ہے۔

رپورٹ پر آئندہ چند روز میں چوری کے ذمہ داران کا تعین کر کے ان کے خلا ف کاروائی کا امکان ہے ۔ذرائع کے مطابق تحقیقاتی رپورٹ سے متعلق کمپیوٹر چوری میں ملوث افراد کو بھی ہو چکی ہے ،جنہوں نے کاروائی سے بچنے کیلئے بھاگ دوڑ شروع کرنے کے ساتھ ساتھ بااثرافسران سے رابطے شروع کر دیئے ہیں