چین کے ساتھ کشیدگی، بھارتی فوج کا ڈوكلام کے پاس گاؤں خالی کرنے کا حکم

چین کے ساتھ کشیدگی، بھارتی فوج کا ڈوكلام کے پاس گاؤں خالی کرنے کا حکم

ناتھنانگ نامی یہ گاؤں ڈوكلام سے 35 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔ بھارتی فوج نے گاؤں کے رہائشیوں کو فوری طور پر اپنے گھر خالی کرنے کے احکامات جاری کر دیے ہیں۔

نئی دہلی (تہلکہ ٹی وی) انڈین میڈیا رپورٹس کے مطابق چین کے ساتھ بڑھتی ہوئی سرحدی کشیدگی اور ممکنہ جنگ کے پیش نظر بھارتی فوج نے ڈوکلام کے نزدیکی گاؤں کو فوری طور پر خالی کرنے کے احکامات جاری کر دیے ہیں۔ ناتھنانگ نامی یہ گاؤں ڈوكلام سے محض 35 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

اطلاعات ہیں کہ بھارت اس گاؤں میں اپنے تازہ دم فوجی دستوں کو رکھنے کا پروگرام بنا رہا ہے جنھیں ڈوکلام کی جانب روانہ کیا گیا ہے۔ انڈین فوج کی اس تازہ پیشرفت کو چین کے ساتھ سرحدی کشیدگی کے ساتھ جوڑ کر دیکھا جا رہا ہے۔

خیال رہے کہ ڈوکلام تنازع پر چین اور بھارت کے درمیان کشیدگی میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ یہ صورتحال اس وقت پیدا ہوئی جب چین نے ڈوكلام میں سڑک بنانے کا فیصلہ کیا۔ بھوٹان نے سڑک کی تعمیر پر اعتراض اٹھایا تو انڈین فوج نے آگے بڑھ کر چین کو روک دیا، اب گزشتہ 50 دنوں سے دونوں فوجیں آمنے سامنے موجود ہیں۔